بریکنگ نیوز
latest

468x60

پاکستان اور آئی ایم ایف کے ساتویں اقتصادی جائزہ مذاکرات مزید تاخیر کا شکار

 

پاکستان اور آئی ایم ایف کے ساتویں اقتصادی جائزہ مذاکرات مزید تاخیر کا شکار

اس حوالے سے وزارت خزانہ کا کہنا ہے کہ پاکستان کے آئی ایم ایف کے ساتھ ساتویں اقتصادی جائزہ سے متعلق تکنیکی سطح کے مذاکرات جاری ہیں اور آئی ایم ایف کے ساتھ ڈیٹا شیئرنگ بھی ہورہی ہے، تکنیکی سطح کے مذاکرات کے بعد آئی ایم ایف کے ساتھ ساتویں اقتصادی جائزے کے لیے میمورنڈم آف اکنامک اینڈ فنانشل پالیسی (ایم ای ایف پی) کے متن پر تبادلہ خیال ہوگا، تکنیکی مذاکرات مکمل ہونے کے بعد میمورنڈم آن اکنامک اینڈ فنانشل پالیسیوں کے مسودے کو حتمی شکل دی جائے گی۔

وزارت خزانہ کے اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ حکومت کو یقین ہے کہ آئی ایم ایف کے ساتھ میمورنڈم آف اکنامک اینڈ فنانشل پالیسی (ایم ای ایف پی) کے متن کو حتمی شکل دینے کے بعد اپریل 2022ء کے آخر میں آئی ایم ایف ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس منعقد ہوگا اور حکومت ستمبر میں آئی ایم ایف پروگرام کو کامیابی سے مکمل کرنے کے لیے پرعزم ہے۔

اعلامیے میں مزید بتایا گیا ہے کہ ساتویں جائزے کے تحت مذاکرات منصوبہ بندی کے مطابق جاری ہیں اور دونوں فریقین کے درمیان ورچوئل میٹنگز اور ڈیٹا شیئرنگ کے ذریعے تکنیکی سطح کے مذاکرات جاری ہیں، ساتویں جائزے کے تحت ہونے جاری مذاکرات میں پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان طے شدہ اہداف کے ساتھ ساتھ حال ہی میں اعلان کردہ وزیراعظم کے امدادی اور صنعتوں کے فروغح کے پیکجز پر فوکس ہے۔

اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ مذاکرات میں پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان س بات پر اتفاق رائے ہے کہ دسمبر کے آخر تک کے طے شدہ تمام اہداف حاصل کر لیے گئے ہیں، جبکہ چھٹے اقتصادی جائزے کے لیے طے پانے والے میمورنڈم آن اکنامک اینڈ فنانشل پالیسیز (ایم ای ایف پی) میں طے کردہ دیگر اقدامات پر پیش رفت بھی تسلی بخش ہے۔

بتایا گیا ہے کہ فنانسنگ آپریشنز، ریلیف پیک اور صنعتوں کے فروغ کے پیکیج سے متعلق مکمل تفصیلات آئی ایم ایف کے ساتھ شیئر کی گئی ہیں اور اس حوالے سے عمومی طور پر مفاہمت پائی جاتی ہے تاہم آئی ایم ایف نے اگلے چند دنوں میں صنعتی فروغ پیکیج پر مزید بات چیت کی ضرورت کا عندیہ دیا ہے۔

کہا گیا ہے کہ آئی ایم ایف کے ساتھ مذاکرات کے بعد مذکورہ پیکیج پر ایک مفاہمت کی توقع ہے جبکہ وزارت خزانہ ذرائع کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف کے ساتھ اتفاق رائے نہ ہونے کے باعث چھ ارب ڈالر کے قرض پروگرام کی اگلی قسط کے حصول کے لیے مذاکرات مزید تاخیر کا شکار ہوگئے ہیں البتہ آئی ایم ایف سے 96 کروڑ ڈالر کی اگلی قسط کے لیے مذاکرات کا عمل جاری رکھنے پر اتفاق کیا گیا ہے۔

« PREV
NEXT »

Facebook Comments APPID